Dua e sari ul ijaba دعائے سریع الاجابہ

Dua e Sari ul Ijaba دعائے سریع الاجابہ ۔ کفعمیؒ نے بلدالامین میں امام موسیٰ کاظم علیہ السلام سے یہ دعا نقل کی ہے اور سے عظیم الشان سریع الاجابت قرار دیا ہے۔ وہ دعا یہ ہے۔


اَللّٰهُمَّ اِنِّيْۤ اَطَعْتُكَ فِيْۤ اَحَبِّ الْاَشْيَاۤءِ اِلَيْكَ وَ هُوَ التَّوْحِيْدُ وَ لَمْ اَعْصِكَ فِيْۤ اَبْغَضِ الْاَشْيَاۤءِ اِلَيْكَ وَ هُوَ الْكُفْر فَاغْفِرْ لِيْ مَا بَيْنَهُمَا يَا مَنْ اِلَيْهِ مَفَرِّيْ اٰمِنِّيْ مِمَّا فَزِعْتُ مِنْهُ اِلَيْكَ اَللّٰهُمَّ اغْفِرْ لِيَ الْكَثِيْرَ مِنْ مَعَاصِيْكَ وَ اقْبَلْ مِنِّيْ الْيَسِيْرَ مِنْ طَاعَتِكَ يَا عُدَّتِيْ دُوْنَ الْعُدَدِ وَ يَا رَجَاۤئِيْ وَ الْمُعْتَمَدَ وَ يَا كَهْفِيْ وَ السَّنَدَ وَ يَا وَاحِدُ يَاۤ اَحَدُ يَا قُلْ هُوَ اللهُ اَحَدٌ اَللهُ الصَّمَدُ لَمْ يَلِدْ وَ لَمْ يُوْلَدْ وَ لَمْ يَكُنْ لَهُ كُفُوًا اَحَدٌ، اَسْاَلُكَ بِحَقِّ مَنِ اصْطَفَيْتَهُمْ مِنْ خَلْقِكَ وَ لَمْ تَجْعَلْ فِيْ خَلْقِكَ مِثْلَهُمْ اَحَدًا اَنْ تُصَلِّيَ عَلٰى مُحَمَّدٍ وَ اٰلِهِ وَ تَفْعَلَ بِيْ مَاۤ اَنْتَ اَهْلُهُ اَللّٰهُمَّ اِنِّيۤ اَسْاَلُكَ بِالْوَحْدَانِيَّةِ الْكُبْرٰى وَ الْمُحَمَّدِيَّةِ الْبَيْضَاۤءِ وَ الْعَلَوِيَّةِ الْعُلْيَا [الْعَلْيَاۤءِ] وَ بِجَمِيْعِ مَا احْتَجَجْتَ بِهِ عَلٰى عِبَادِكَ وَ بِالْاِسْمِ الَّذِيْ حَجَبْتَهُ عَنْ خَلْقِكَ فَلَمْ يَخْرُجْ مِنْكَ اِلَّاۤ اِلَيْكَ صَلِّ عَلٰى مُحَمَّدٍ وَ اٰلِهِ وَ اجْعَلْ لِيْ مِنْ اَمْرِيْ فَرَجًا وَ مَخْرَجًا وَ ارْزُقْنِيْ مِنْ حَيْثُ اَحْتَسِبُ وَ مِنْ حَيْثُ لَاۤ اَحْتَسِبُ اِنَّكَ تَرْزُقُ مَنْ تَشَاۤءُ بِغَيْرِ حِسَابٍ۔

(اس کے بعد اپنی حاجت طلب کرے۔)

Dua e sari ul ijaba دعائے سریع الاجابہ (Urdu Translations)

خدایا میں نے تیری محبوب ترین چیزوں میں تیری اطاعت کی ہے جس کانام ہے توحید اور تیری بدترین اور ناپسندیدہ شے میں تیری نافرمانی نہیں کی ہے جس کا نام ہے کفر۔ لہٰذا ان دونوں کے درمیان جو کچھ بھی ہے اسے معاف کر دے کہ میری فریاد تیری طرف ہے۔ مجھے قیامت کے دن کے خوف سے امان دیدے۔خدایا میرے بے پناہ گناہوں کو معاف کر دے اور میری تھوڑی سی اطاعت کو قبو ل کر لے اے تمام سہاروں کے مقابلہ میں میرے سہارے۔ اے میری منزل امید و اعتماد۔ اے میری پناہ گاہ اور میرے معتمد۔ اے خدائے واحد و احد۔ اے وہ خدائے احد ہے۔ بے نیاز ہے۔ نہ اس کا کوئی باپ ہے نہ بیٹا ہے، نہ کوئی کفو اور ہمسر ہے۔ میں تجھ ان لوگوں کے حق کے واسطہ سے سوال کرتا ہوں جن کو تونے مخلوقات میں مصطفےٰ بنای

Leave a comment

Discover more from Taleem Library

Subscribe now to keep reading and get access to the full archive.

Continue reading